Poetry 4 U

Poetry Web

گواہی کیسے ٹوٹتی معاملہ خدا کا تھا

February 23, 2017 URDU Portry Comments Off on گواہی کیسے ٹوٹتی معاملہ خدا کا تھا

گواہی کیسے ٹوٹتی معاملہ خدا کا تھا گواہی کیسے ٹوٹتی معاملہ خدا کا تھا مرا اور اس کا رابطہ تو ہاتھ اور دعا کا تھا گلاب قیمت شگفت شام تک چکا سکے ادا وہ دھوپ کو ہوا جو قرض بھی صبا کا تھا بکھر گیا ہے پھول تو ہمیں سے پوچھ گچھ ہوئی حساب باغباں […]

Read More

دل پاگل ہے روز نئی نادانی کرتا ہے

February 22, 2017 URDU Portry Comments Off on دل پاگل ہے روز نئی نادانی کرتا ہے

دل پاگل ہے روز نئی نادانی کرتا ہے دل پاگل ہے روز نئی نادانی کرتا ہے آگ میں آگ ملاتا ہے پھر پانی کرتا ہے

Read More

اس شرط پہ کھیلوں گی پیا پیار کی بازی

February 19, 2017 URDU Portry Comments Off on اس شرط پہ کھیلوں گی پیا پیار کی بازی

اس شرط پہ کھیلوں گی پیا پیار کی بازی اس شرط پہ کھیلوں گی پیا پیار کی بازی جیتوں تو تجھے پاؤں، ہاروں تو پیا تیری

Read More

اس شرط پہ کھیلوں گی پیا پیار کی بازی

February 18, 2017 URDU Portry Comments Off on اس شرط پہ کھیلوں گی پیا پیار کی بازی

اس شرط پہ کھیلوں گی پیا پیار کی بازی اس شرط پہ کھیلوں گی پیا پیار کی بازی جیتوں تو تجھے پاؤں، ہاروں تو پیا تیری

Read More

وہ ہم نہیں جنہیں سہنا یہ جبر آ جاتا

February 18, 2017 URDU Portry Comments Off on وہ ہم نہیں جنہیں سہنا یہ جبر آ جاتا

وہ ہم نہیں جنہیں سہنا یہ جبر آ جاتا وہ ہم نہیں جنہیں سہنا یہ جبر آ جاتا تری جدائی میں کس طرح صبر آ جاتا فصیلیں توڑ نہ دیتے جو اب کے اہل قفس تو اور طرح کا اعلان جبر آ جاتا وہ فاصلہ تھا دعا اور مستجابی میں کہ دھوپ مانگنے جاتے تو […]

Read More

اگرچہ تجھ سے بہت اختلاف بھی نہ ہوا

February 18, 2017 URDU Portry Comments Off on اگرچہ تجھ سے بہت اختلاف بھی نہ ہوا

اگرچہ تجھ سے بہت اختلاف بھی نہ ہوا اگرچہ تجھ سے بہت اختلاف بھی نہ ہوا مگر یہ دل تری جانب سے صاف بھی نہ ہوا تعلقات کے برزخ میں ہی رکھا مجھ کو وہ میرے حق میں نہ تھا اور خلاف بھی نہ ہوا عجب تھا جرم محبت کہ جس پہ دل نے مرے […]

Read More

اک ہنر تھا کمال تھا کیا تھا

February 18, 2017 URDU Portry Comments Off on اک ہنر تھا کمال تھا کیا تھا

اک ہنر تھا کمال تھا کیا تھا اک ہنر تھا کمال تھا کیا تھا مجھ میں تیرا جمال تھا کیا تھا تیرے جانے پہ اب کے کچھ نہ کہا دل میں ڈر تھا ملال تھا کیا تھا برق نے مجھ کو کر دیا روشن تیرا عکس جلال تھا کیا تھا ہم تک آیا تو بہر […]

Read More

بادباں کھلنے سے پہلے کا اشارہ دیکھنا

February 18, 2017 URDU Portry Comments Off on بادباں کھلنے سے پہلے کا اشارہ دیکھنا

بادباں کھلنے سے پہلے کا اشارہ دیکھنا بادباں کھلنے سے پہلے کا اشارہ دیکھنا میں سمندر دیکھتی ہوں تم کنارہ دیکھنا یوں بچھڑنا بھی بہت آساں نہ تھا اس سے مگر جاتے جاتے اس کا وہ مڑ کر دوبارہ دیکھنا کس شباہت کو لیے آیا ہے دروازے پہ چاند اے شب ہجراں ذرا اپنا ستارہ […]

Read More

ایک سورج تھا کہ تاروں کے گھرانے سے اٹھا

February 18, 2017 URDU Portry Comments Off on ایک سورج تھا کہ تاروں کے گھرانے سے اٹھا

ایک سورج تھا کہ تاروں کے گھرانے سے اٹھا ایک سورج تھا کہ تاروں کے گھرانے سے اٹھا آنکھ حیران ہے کیا شخص زمانے سے اٹھا کس سے پوچھوں ترے آقا کا پتہ اے رہوار یہ علم وہ ہے نہ اب تک کسی شانے سے اٹھا حلقۂ خواب کو ہی گرد گلو کس ڈالا دست […]

Read More

تراش کر مرے بازو اڑان چھوڑ گیا

February 18, 2017 URDU Portry Comments Off on تراش کر مرے بازو اڑان چھوڑ گیا

تراش کر مرے بازو اڑان چھوڑ گیا تراش کر مرے بازو اڑان چھوڑ گیا ہوا کے پاس برہنہ کمان چھوڑ گیا رفاقتوں کا مری اس کو دھیان کتنا تھا زمین لے لی مگر آسمان چھوڑ گیا عجیب شخص تھا بارش کا رنگ دیکھ کے بھی کھلے دریچے پہ اک پھول دان چھوڑ گیا جو بادلوں […]

Read More